Home > Statements > امام حسینؓ کی زندگی تمام مظلوموں کے لیے مشعل راہ ہے۔ محمد فاروق رحمانی

امام حسینؓ کی زندگی تمام مظلوموں کے لیے مشعل راہ ہے۔ محمد فاروق رحمانی

November 23, 2012 Leave a comment Go to comments

 24.11.2012 افضل گورو کی زندگی کے بارے میں اظہار تشویش
اسلام آباد (پریس ریلیز) جموں و کشمیر پیپلز فریڈم لیگ کے چئیرمین محمد فاروق رحمانی نے حضرت امام حسینؓ کی زندگی اور قربانی کو نزرانہ عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ حضرت محمد مصطفیٰ ﷺ کے پوتے اور کاشانِ نبوت کی زندگی اور قربانی مظلوم انسانوں کے لیے مشعل راہ ہے ۔خانوادہ نبیؐ نے زندگی بھر روز شہادت تک بے مثال قربانیاں دیں اور کربلا کے لق و دق صہرا کو تا قیامت اپنے خون سے رنگین کردیا ۔ انہوں نے کہا کہ امام عالیٰ مقام اور ان کے خاندان نے حق و انصاف کے لیے جو قربانیاں پیش کیں وہ ساری دنیا کے اہل ایمان کبھی فراموش نہیں کریں گے۔

انہوں نے کہا کہ شہدا ء کربلا کو پہلے ہی اللہ تعالیٰ نے امن ،محبت ، صبر و استقامت کی صفات سے مزین کیا تھا اور انہوں نے لوگوں کو ہمیشہ زندگی کے ہر شعبے میں قرآن اور سنت نبوی پر چلنے کی تلقین کی تھی ۔ وہ زور دیتے تھے کہ مسلمان اللہ سے ڈریں اور انسانیت کی خدمت کریں اور کسی بھی قیمت پر پیغمبرؐ اسلام کی تعلیمات سے دور نہ ہوں ۔اما م اعلیٰ مقام نے کبھی زندگی میں قتل و غارت نہیں کیا لیکن انہوں نے شہا دت کو ہر چیز پر مقدم رکھا۔

size=” 4″> محمد فاروق رحمانی نے دنیا بھر کی مظلوم قوموں خاص کر کشمیر اور فلسطین کے عوام سے کہا ہے کہ وہ اپنی آزادی کے حصول اور غیر ملکی حکمرانو ں اور بے رحم سامراجوں سے نجا ت حاصل کرنے کے لیے نواسہ رسول ؐ کے نقوش قدم پر چلیں۔انہوں نے کہا کہ اس سوال پر دو رایں نہیں ہیں کہ کشمیر بھی حق و انصاف کے طاغوت کے خلاف جدوجہد کا مسئلہ ہے۔اور یہ بات اقوام عالم کو معلوم ہے کہ کشمیریوں کی سر زمین پر ہندوستانی سامراجیت نے ناجائز تسلط کیا ہے اور اب سامراجیت کے حکمران نئے سخت گیر قوانین بنا چکے ہیں جن کا مقصد ایسے قوانین اور رولز نافذ کرنا ہے کہ بے گناہ کشمیریوں کو قتل کیا جائے اور ان کی قدرتی دولت اور افرادی قوت ختم کی جائے ۔
انہوں نے کہا ایسے بہت سا رے مظلوم کشمیری طویل عرصے سے جیلوں میں ہیں ،اور بھی لوگ جیلوں میں ڈالے جا تے ہیں اور جدوجہد آزادی کی پاداش میں سیاسی کارکنوں کو زندگی بھر قید خانوں میں رکھنے کی سزا دی جاتی ہے۔ حق و انصاف کے لیے آواز بلند کرنا کشمیریوں کا سب سے بڑا جر م ہے ۔
افضل گورو کی زندگی کے بارے میں اظہار تشویش
محمد فاروق رحمانی نے کہا ہے کہ جموں و کشمیر میں ہندوستان کے ظالمانہ عزائم کا بین ثبوت وہاں کے دہشت ناک قوانین ہیں جو مسلمہ جمہوری اصولوں کا منہ چڑا تے ہیں جن کے ذریعے سے سیاسی کارکنوں کو خطرناک سزایں دی جاتی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ حالات میں حریت پسند نظر بند افضل گورو کی زندگی کو سخت خطرات لاحق ہیں۔ یا د رہے کہ افضل گورو کافی عرصے سے ہندوستانی پارلیمنٹ پر حملہ کرنے کی پاداش میں قید ہے۔افضل گورو کو دیدہ و دانستہ اس مقدمے میں ملوث کیا گیا لیکن انہیں اپنی بے گناہی ثابت کرنے کے لیے کبھی آزادانہ مواقع نہیں دیئے گے۔
محمد فاروق رحمانی نے کہا کہ افضل گورو کے ساتھ مجرمانہ سلوک ہورہاہے اور انہوں نے خبردا رکیا کہ اگر ہندوستان نے اس معاملے میں کوئی انتہائی اقدام کیا تو اس کے نتائج برے ہوں گے ۔جن سے علاقائی امن و سلامتی کو خطر ہ ہو گا اور جموں وکشمیر اور بھارت اور پاکستان کے درمیان اعتماد سازی کے اقدامات متاثر ہوں گے انہوں نے ہندوستانی حکومت پر زور دیا کہ وہ ملک کے شدت پسند اور فرقہ پرست عناصر کے کہے میں نہ آئے اور اس بات کو سمجھ لے کہ افضل گورو کے خلاف کسی بھی اقدام سے جموں و کشمیر کا امن تہس نہس ہو جائے گا ۔اس لیے بھارت کو چاہیئے کہ وہ غیر مستحکم علاقے کو خطرناک حالات کی طرف نہیں لے جائے ۔

Categories: Statements
  1. No comments yet.
  1. No trackbacks yet.

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s

%d bloggers like this: